اردوئے معلیٰ

Search

سو آج سلسلۂ روزوشب وہیں پہنچا

جہاں سے کربِ مسلسل کی ابتدا ہوئی تھی

 

اُسی مقام پہ آ نکلا ہے پھر سے جادۂ وقت

جہاں حیات ترے غم سے آشنا ہوئی تھی

 

یہی وہ موڑ تھا جس پر جنوں بنا مرا دوست

اسی پڑاؤ پہ مجھ سے خوشی خفا ہوئی تھی

 

بفیضِ گردشِ دوراں ہوا جو حال ہوا

مگر یہ سوچ کے دل کو بہت ملال ہوا

کہ تُجھ سے بچھڑے ہوئے آج ایک سال ہوا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ