سب سے اعلیٰ سب سے ارفع شانِ ربُ العالمین

سب سے اعلیٰ سب سے ارفع شانِ ربُ العالمین

ساری تعریفیں ہیں بس شایانِ ربُ العالمین

 

ہر طرف ہے اُس کی قدرت کا کرشمہ آشکار

ہر جگہ ہے جلوۂ تابانِ ربُ العالمین

 

ہے کشادہ سب کی خاطر اُس کا دربارِ کرم

عام ہے سب کے لیے فیضانِ ربُ العالمین

 

سر وہی ہے جس میں ہو سودا خدائے پاک کا

دل وہی ہے جس میں ہو ارمانِ ربُ العالمین

 

جس کو حاصل ہو گئی پہچان اپنے نفس کی

اُس کو حاصل ہو گیا عرفانِ ربُ العالمین

 

ہو نہیں سکتا ادا اس کے کرم کا شکریہ

اس قدر ہم سب پہ ہیں احسانِ ربُ العالمین

 

جنت الفردوس کے وارث وہی ہوں گے حفیظؔ

ہیں جو دل سے تابعِ فرمانِ ربُ العالمین

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ