اردوئے معلیٰ

سما سکتی ہے کیونکر حبِ دُنی کی ہوا دل میں

سما سکتی ہے کیونکر حبِ دُنی کی ہوا دل میں

بسا ہو جب کہ نقش حبِ محبوب خدا دل میں

 

محمد کی محبت دینِ حق کی شرطِ اول ہے

اسی میں ہو اگر خامی تو سب کچھ نامکمل ہے

 

محمد کی غلامی ہے سند آزاد ہونے کی

خدا کے دامنِ توحید میں آباد ہونے کی

 

محمد کی محبت خون کے رشتوں سے بالا ہے

یہ رشتہ دنیوی قانون کے رشتوں سے بالا ہے

 

محمد ہے متاعِ عالم ِایجاد سے پیارا

پدر، مادر، برادر، مال، جان، اولاد سے پیارا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ