نئے سال کی پہلی دُعا

ایک اس کے سوا
میں نئے سال سے
اور تو کچھ نہیں
کچھ نہیں مانگتا
یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

ذرا سا بچ کے چلو کاٹتا ہے، کُتّا ہے
تُم
ہم لوگ
محسنہ
تمہارے جانے کے بعد قَسمیں
باالیقیں مروہ ، صفا پر زندگی ہے آپؐ سے
اسطرح قید ہوں ذات کے خول میں
دُعا
چمکتے ستارے! اگر میں تری طرح لافانی ہوتا
سوچتا ہوں جانے کیوں؟