اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

شکست میرا مقدر سہی سنبھال مجھے

شکست میرا مقدر سہی سنبھال مجھے

متاعِ صبر عطا کر دے ذوالجلال مجھے

 

فقط تری ہی محبت ہو خانۂ دل میں

اس آرزوئے حقیقی سے کر نہال مجھے

 

انا سے دل کو مرے پاک رکھ کہ اس کے سبب

عروج لے کے چلا جانبِ زوال مجھے

 

درست کر مری فطرت میں خامیاں ہیں بہت

نواز خوبیِ کردار و خوش خصال مجھے

 

وہ جس کمال نے صلحا کو سرفرازی دی

مرے کریم عطا کر وہی کمال مجھے

 

گناہگار ہوں ڈوبا ہوا ہوں عصیاں میں

تو اس عمیق سمندر سے اب نکال مجھے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

امن عالم کے لیے انسانِ اکمل بھیج دے
جو پُر یقیں ہیں انھی کو اٹھان دیتا ہے
دل کو میرے کر دے اب سیراب رب العلمیں
رحمتِ الٰہی
امن کا سورج پھر چمکا دے یا اللہ
خدا قلاّش کو بھی شان و شوکت بخش دیتا ہے
میں بھنور میں پھنسا یا رسولِ خدا
قادرِ مطلق
میرے مالک یہ تجھ سے دعا ہے
ہے میرا سینہ، مرا مدینہ