اردوئے معلیٰ

شہیدِ اعظم

حسینؓ حرفِ صداقت کی انتہا تم ہو

خد اکو ناز ہے جس پر ، وہ بے نوا تم ہو

 

حسینؓ عظمتِ انساں کے خواب کی تعبیر

حسینؓ ہمت و جرأت کی بولتی تصویر

 

حسینؓ جذبۂ ایمان و آگہی کا امیں

کمالِ صبر و رضا ، منتہائے صدق و یقیں

 

حسینؓ دشتِ بلا خیز میں تنِ تنہا

بھری بہار لُٹا کر بھی سجدہ ریز رہا

 

حیات و موت سے بیگانہ ایک فردِ عظیم

ادھر تو ایک مسافر ، اُدھر ہزار غنیم

 

شہیدِ شوق ترے ریزہ ریزہ تن کی قسم

پلک پلک ہے زمانے کی ، تیرے غم سے نم

 

تری شہادتِ عظمیٰ پہ آج بھی حیراں

خرد کے نشے میں ڈوبا ہوا جدید انساں

 

فناؔ کی راہ میں تجھ کو ملی حیاتِ دوام

قبول ہو مرے فن ، میری شاعری کا سلام

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ