اردوئے معلیٰ

Search

صلح کی شرطیں اپنی جگہ پر آپ کا خلق ہی ایسا تھا

وہ واپس جاتا ہی کب تھا ، آپ کے پاس جو آتا تھا

 

مکہ سے جو آپ کے در تک پیدل چل کر آیا تھا

روضے کی جالی سے لگ کر حاجی کتنا رویا تھا

 

چاندنی نے دیوار طیبہ سے جس حال میں رخصت لی

صبح کی آنکھیں بھیگ گئی تھیں منظر ہی کچھ ایسا تھا

 

ایک بلاوا آس کی کشتی کو لے آیا ساحل پر

پیچھے آفتوں کے گھیرے تھے بیچ میں ریت کا دریا تھا

 

لب پر ایک مٹھاس سی جاگی جب وہ کنواں دکھلایا گیا

آپ کے پاک لعاب سے پہلے جس کا پانی کھارا تھا

 

راہب نے جو دعوت دی تھی مکہ والے تاجروں کو

قافلے کی عزت کا باعث بارہ سال کا بچہ تھا

 

عارض کے دامن پر اس میں یاد نبی کی روشی تھی

آنکھ نے آنسو کے ماتھے پر دل کا حال جو لکھا تھا

 

معجزے دستِ مبارک کے سبحان اللہ سبحان اللہ

ایک ہی ضرب سے آپ نے وہ خندق کا پتھر توڑا تھا

 

پتھر آگ سے گرم نہیں ہوتا اور تیرنا جانتا ہے

راز جو کھولا گیا بحرین میں ، آقا نے بتلایا تھا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ