اردوئے معلیٰ

عجیب قاعدے ہجرت! تری کتاب میں ہیں

خسارے دونوں طرف کے مرے حساب میں ہیں

 

یہ طے ہوا ہے کہ اب اُس کی ملکیت ہوں گے

وہ سب علاقے جو میری حدودِ خواب میں ہیں

 

نہ تشنگی میں کمی ہے، نہ پانیوں کی کمی

عذاب میں ہیں کہ پیاسے کسی سراب میں ہیں

 

تجھے ہی رکھتے ہیں قلب و نظر کے آگے امام

جہاں بھی ہوں ترے بندے تری جناب میں ہیں

 

اُبھر کے بحر کشاکش سے دیکھتے ہیں تجھے

ذرا سی دیر کو ہم گنبدِ حباب میں ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات