اردوئے معلیٰ

عشق بس عشق مصطفےٰ مانگوں

اور تجھ سے نہ کچھ خدا مانگوں

 

اس دعا سے بڑی دعا کیا ہے

اس سے بڑھ کر میں کیا دعا مانگوں

 

میرے سوزِ جگر کے چارہ رساں

تجھ سے ہر زخم کی دوا مانگوں

 

زندگی مجھ کو بخشنے والے

زندگی کا میں مدعا مانگوں

 

اپنے آپے سے ہو کے باہر آج

تجھ سے میں تیرا دل ربا مانگوں

 

لوگ کہتے ہیں جن کو بے سایہ

ان کے سائے کا آسرا مانگوں

 

جاں بھی جائے تو آسؔ دے کر میں

ان کے کوچے کی خاک پا مانگوں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات