اردوئے معلیٰ

غضب کی دھن ، بلا کی شاعری ہے

خموشی انتہا کی شاعری ہے

 

بجز سجدہ نہیں ہے داد ممکن

ترا چہرہ خدا کی شاعری ہے

 

اسے اب پھیلنے سے کون روکے

یہ خوشبو تو ہوا کی شاعری ہے

 

بلک اٹھے ہیں سارے سننے والے

یہ کس درد آشنا کی شاعری ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات