لبوں پہ جان ہے اک دم کا اور میہماں ہے

لبوں پہ جان ہے اک دم کا اور میہماں ہے

مریض عشق و محبت کا تیرے حال یہ ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ