اردوئے معلیٰ

لے کے اٹھی نغمہ صفات محمد

لے کے اٹھی نغمہ صفات محمد

ظلمت شب میں حرا کی صبح مخلد

 

وادی فاراں کی تابناک سحر سے

نور فشاں ہے یہ آسمان زبر جد

 

اُس کو ملی سروری و خسروی دہر

اُس پہ اتاری گئی کتاب مجلد

 

عکس جبیں اُس کا عکس ماہ متمم

نقش نگیں اُس کا نقش لعل و زمرد

 

اُس نے دکھائی ہے مجھ کو راہ بصیرت

اُس نے سجائی ہے میرے فکر کی مسند

 

اُس نے بتایا مجھے ادب کا سلیقہ

اُس نے سکھایا ہے احترام اب و جد

 

اُس کا زمانے نے احترام کیا ہے

جس نے کیا دل سے احترام محمد

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ