اردوئے معلیٰ

مجھے نہ باپ کی نازوں پلی کہا جائے

ہے کرب ایسا کہ جنموں جلی کہا جائے

 

ملا تھا باغ میں کچھ دن قیام کا موقع

لہذا شاخ سے ٹوٹی کلی کہا جائے

 

فقط گناہ ہیں منسوب ہم سے ، باقی لوگ

وہ پارسا ہیں کہ ان کو ولی کہا جائے

 

یہاں پہ رہتا ہے قدرت کا اک حسیں شہکار

تری گلی کو بھی نتھیا گلی کہا جائے

 

وہ شخص میٹھا ہے اتنا کہ اب یہ خواہش ہے

بلانا ہو تو بس گڑ کی ڈلی کہا جائے

 

ہمیں جو عشق ہے سادات کی طرح ان سے

ہمیں بھی عاشق مولا علی کہا جائے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات