اردوئے معلیٰ

مدینے جو چلنے کا وقت آرہا ہے

گناہوں کے دُھلنے کا وقت آرہا ہے

 

طلا ہوں محمد کے روضے کی جانب

کہ قسمت چمکنے کا وقت آرہا ہے

 

قدم بہ قدم دل مچلتا ہے میرا

مدینے میں بسنے کا وقت آرہا ہے

 

وہ چھائیں گھٹائیں، گھٹا ٹوپ سر پر

کہ رحمت برسنے کا وقت آرہا ہے

 

شفا مجھ کو خاک مدینہ سے ہوگی

شفایاب ہونے کا وقت آرہا ہے

 

میں آقا کے در سے نہ جاؤں گا خالی

کہ جھولی بھرنے کا وقت آرہا ہے

 

گدائی ملے گی نصیر اُن کے در کی

مدینے میں رہنے کا وقت آرہا ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات