مرحبا! رحمت دوامی پر سلام

مرحبا! رحمت دوامی پر سلام

آپ کی ذاتِ گِرامی پر سلام

 

دُشمنوں کے دِل میں بھی گھر کر گئی

آپ کی شیریں کلامی پر سلام

 

سارے انسانوں کے مُحسن آپ ہیں

آپ کے ہر نامِ نامی پر سلام

 

آپ کی ہر اک ادا صَد آفریں

امن کی صوتِ پیامی پر سلام

 

آپ کی نسبت کی برکت مرحبا!

ہر گدا کی شاد کامی پر سلام

 

دَم بہ دَم سُلطانِ عالم پر دُرود

دَم بہ دَم میرِ تمامی پر سلام

 

تو گدائے سرورِ دِیں ہے رضاؔ

تیری اِس قسمت، غلامی پر سلام

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

سلام علیک اے نبی مکرم
خلق لائے گی کہاں سے تیرے جیسا یا حسینؑ
رحمتِ باری برستی ہے دیارِ نور میں
چین پائیں گے سب مدینے میں
حُسن کا مرکز سراپا آپ کا
آمدِ خیرالواریٰ حق مرحبا صد مرحبا
ان کو آتا ہے رب العلی کا سلام
کرم کی چادر مِرے پیمبر
دُعا ہے میں سعادت ایسی پاؤں
لبوں پہ جب بھی درود و سلام آتا ہے

اشتہارات