اردوئے معلیٰ

Search

مرے آقا، کرم مُجھ پر خُدارا

ہو لللّٰہ ایک رحمت کا اشارا

 

نگاہِ لُطف و رحمت مُجھ گدا پر

تمھی ہو رحمتوں کا بہتا دھارا

 

مجھے غرقاب ہونے سے بچا لیں

کریں گرداب میں پیدا کنارا

 

بہ احوالِ خرابِ ما نظر کُن

عطا کُن، عشق و مستی بے نوا را

 

جھلک سرکار کی دیکھی ہے جب سے

نہیں اب ہجر میں ہوتا گزارا

 

قدم سرکار گر رکھیں قبر پر

لحد میں بھی میں جی اُٹھوں دو بارا

 

خُدا کا فضل، رحمت مصطفی کی

ظفرؔ کا اوّل و آخر سہارا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ