اردوئے معلیٰ

Search

مرے آسمانِ دل پہ کچھ عجب گھٹا سی چھائی

جہاں آہِ سرد کھینچی کہ بہارِ غوث آئی

 

وہ قدم کہاں جمائے، وہ نظر کہاںاُٹھائے

جسے راس آگئی ہو تیرے نام کی دھائی

 

بہ نگاہِ غوث دیکھو تو یہ بات مان لو گے

جہاں عظمتِ خدا ہے وہیں شانِ مصطفائی

 

کوئی دوسرا نہ دیکھا بہ ہزار جستجو بھی

تری ذات غوثِ اعظم ہے عجب حسیں اکائی

 

بہ خیالِ شاہِ جیلاں جو ادب سے چپ ہوا میں

مری خوش عقیدگی نے نئی منقبت سنائی

 

جہاں اُن کا نام آیا، غم اشک جھلملایا

میری روح کی حقیقت ہے صبیحؔ کربلائی

 

جہاں جام پی کے بہکا دل و روح مسکرائے

ترے رند کا قدم ہے طریقِ پارسائی

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ