مرے گمان سے وہ شخص مرنے والا ہے

مرے گمان سے وہ شخص جانے والا ہے

جسے میں آئینے میں دیکھتا ہوں اپنی جگہ

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

ترے بِن گھڑیاں گِنی ھیں رات دن
اچھا ہوا شباب کا عالم گزر گیا
میں ہجر زاد کہاں اور وصالِ یار کہاں
جتنا چھڑکا ہے تو نے زخموں پر
اب کوئی در، نہ کوئی راہ گزر دیکھوں گا
دنیا میں کوئی عشق سے بد تر نہیں ہے چیز
یہی لہجہ تھا کہ معیار سخن ٹھہرا تھا
چپ چپ رہنا آہیں بھرنا کچھ نہ کہنا لوگوں سے
میں مے کدے کی رہ سے ہو کر نکل گیا
لبھدا فر ، ہن گلیاں گلیاں