اردوئے معلیٰ

مسکرانے کا مہینہ آ گیا

دل سجانے کا مہینہ آ گیا

 

غم کے مارے جھوم کر کہنے لگے

غم بھلانے کا مہینہ آ گیا

 

جن کی خاطر ہیں بنے دونوں جہاں

اُن کے آنے کا مہینہ آ گیا

 

مرحبا ، صلِّ علیٰ کے ہر طرف

گیت گانے کا مہینہ آ گیا

 

نفرتیں ساری بھلا کر دوستو!

دل ملانے کا مہینہ آ گیا

 

نور کی برسات میرے چار سو

گنگنانے کا مہینہ آ گیا

 

عید میلاد النبی کے جشن میں

گھر سجانے کا مہینہ آ گیا

 

اُن سے اُن کی الفتوں کا اے رضاؔ

فیض پانے کا مہینہ آ گیا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات