اردوئے معلیٰ

 

مصروفِ ثنا میں ہے ثناخوانِ محمد
ہے نغمہ سرا بلبل بستانِ محمد

 

خوش رنگ گُل وغنچہ معطّر ہیں فضائیں
صد رشکِ بہاراں ہے گلستانِ محمد

 

رضواں درِ جنت پہ ہمیں دیکھ کے بولا
آنے دو انہیں یہ ہیں غلامانِ محمد

 

محشر میں گنہگاروں کی بن جائے گی بگڑی
مل جائے اگر سایۂ دامانِ محمد

 

معراجِ نبی عرش کی عظمت کا سبب ہے
یوں کہیے یہ ہے عرش پہ احسانِ محمد

 

یہ نہ تھے تو بس اللہ تھا دنیا تھی نہ عقبیٰ
سمجھے بھی تو کس طور کوئی شانِ مصطفیٰ

 

رضوی یہ تقاضہ ہے غلامی کا نبی کی
جو کچھ بھی لکھو، لکھو بہ عنوانِ محمد

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات