اردوئے معلیٰ

ملے کچھ عشق میں اتنا قرار کم از کم

ہمارے چہروں پہ آئے نکھار کم از کم

 

سنائی دینے لگے اُس کی دھڑکنوں سے صدا

کسی سے اتناتو ہو ہم کو پیار کم از کم

 

ہم اپنے خواب کی تعبیر کچھ نکالیں کیا

کہ ایک لمحہ تو ہو پائیدار کم از کم

 

مرے چمن میں خزاں رکھ چکی قدم لیکن

مرے خیال کو ملتی بہار کم از کم

 

تمام عمر کی نقدی میں دیکھئے صاحب

دو چار لمحے تو ہوں خوش گوار کم از کم

 

چنی وہ راہ گزر جس طرف نہیں جانا

ہو اپنے دل پہ ہمیں اختیار کم سے کم

 

ہم اُس کی یاد کو رکھ کر سرھانے بیٹھے ہیں

کسی طرح تو کٹے انتظار کم از کم

 

اک آدھ شخص اذیت پسند ہے لیکن

تمھارا ہجر کرے اعتبار کم از کم

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات