اردوئے معلیٰ

منقبت سیّدنا ابی طالب : صبر کی انتہا ہے سجدے میں

 

صبر کی انتہا ہے سجدے میں

خونِ ناحق بہا ہے سجدے میں

 

حملہ آور ہوا کوئی ملعون

اور علی مرتضیٰؓ ہے سجدے میں

 

مسجدِ کوفہ بن گئی مقتل

فخرِ خیرالوریٰ ہے سجدے میں

 

بزدلی دیکھ ابنِ ملجم کی

میرا شیرِ خدا ہے سجدے میں

 

قدسیوں نے کہا گواہی میں

اوجِ صبر و رضا ہے سجدے میں

 

آفتابِ کمالِ ہستی آج

روبروئے خدا ہے سجدے میں

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ