اردوئے معلیٰ

Search

مُصحفِ لا ریب کی تفسیرِ مدحت لَم یزَل

اوجِ ذکرَک بے نہایت ، موجِ رفعت لَم یزَل

 

کس تناظر میں بیاں ہو شانِ معراجِ نبی

مطلعِ اظہار پر ہے نقشِ حیرت لَم یزَل

 

انفس و آفاق میں ہے خیر پرور ، نُور بار

صبحِ میلادِ کرم کی رُودِ طلعت ، لَم یزَل

 

ملتوں اور منطقوں میں آتی جاتی تھی ، مگر

اب گُلِ ختمِ نبوت کی ہے نکہت لَم یزَل

 

آپ کو ہے از ازَل توفیقِ عفوِ عاصیاں

آپ کو ہے تا ابد اذنِ شفاعت لَم یزَل

 

الحذر ، امکانِ شرکِ نعتِ احمد ، الحذر

اُن کی عظمت بے تقابل ، اُن کی شوکت لَم یزَل

 

ناقصوں کو مَل رہا ہے دَم بدَم ایقانِ نَو

کاملوں پر ملتفت ہے اُن کی رحمت لَم یزَل

 

جوہرِ آئینۂ نُدرت ہے مدحِ شاہِ دیں

سیدُ الاصناف کی شانِ فصاحت لَم یزَل

 

مَیں گداگر ہُوں درِ کاشانۂ اخیار کا

آلِ اطہر سے ہے قائم میری نسبت لَم یزَل

 

شکر ہے ، مقصودؔ اُس فیاض سے ہے واسطہ

جس کے خوانِ جُود پروَر کی ہے وسعت لَم یزَل

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ