اردوئے معلیٰ

سہما ہوا ہے کمرے میں برسوں کا انتظار

جالے ہیں فرقتوں کے کواڑوں کے بیچ میں

اک شخص ٹوٹ کر ہوا کچھ اور پُر بہار

اُگتے ہوں جیسے پھول دراڑوں کے بیچ میں

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات