اردوئے معلیٰ

Search

 

مہکی ہے فضا گیسوئے محبوب عرب سے

خوشبوئے سحر آنے لگی کاکل شب سے

 

دیکھے تو کوئی معجزہ گنبد خضریٰ

تقدیر بدل جاتی ہے اک جنبش لب سے

 

اللہ رے تہذیب مدینہ کی یہ عظمت

جنت کی ہوا بھی یہاں آتی ہے ادب سے

 

دھڑکن جو مرے دل میں ہے الفت کی ہے دھڑکن

یہ جلوۂ عالم ہے عقیدت کے سبب سے

 

گلؔ !اپنے تذبذب کا تو کچھ راز بتاؤ

کیوں رہتے ہو ہر بزم میں تم شکوہ بہ لب سے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ