میرے اللہ ! گناہوں کے مرض سے ہو شِفا

میرے اللہ ! گناہوں کے مرض سے ہو شِفا

ہو پذیرا تری سرکار میں بیمار کی بات

تیری رحمت ہے مرے جرم و معاصی سے فزوں

سن ہی لے ! ایک خطا کار و گنہگار کی بات

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

خدایا! حاملِ آدابِ بندگی کردے
پیامِ مغفرت
جذبۂ الفت شہہِ خیراُلامم ﷺ کی نذر ہے
نقشِ پا اُن ﷺ کا لا کلام تمام
سلسبیلِ نور میرے قلب تک پہنچی عزیزؔ
لگا لُعابِ دہن جب علیؓ کی آنکھوں میں
محبتِ شاہِ ﷺ دین و دنیا کے کھل رہے ہیں چمن ہزاروں
اے کاش حیات آپ ﷺ کے قدموں میں گزر جائے
غزل کے روپ میں نعتوں کا آئینہ دیکھو
تو میری سوچ کے پودے کو اک شجر کر دے