اردوئے معلیٰ

میں آج اپنا پتہ پوچھتی ہوں اِک اِک سے

میں آج اپنا پتہ پوچھتی ہوں اِک اِک سے

مرا وجود ہی شاید بچھڑ گیا مجھ سے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ