میں لکھوں حمد ربِّ مصطفیٰ کی

میں لکھوں حمد ربِّ مصطفیٰ کی

میں لکھوں نعت محبوبِ خدا کی

 

میں حمد و نعت باہم لکھ رہا ہوں

ثنا سے حمد ہرگز نہ جدا کی

 

جو لکھی نعت ختم المرسلیں کی

خدا کی حمد سے ہی ابتدا کی

 

محبت باہمی روزِ ازل سے

شبِ معراج تجدیدِ وفا کی

 

درُود اللہ جب بھیجے نبی پر

گھڑی ہوتی ہے وہ فیض و عطا کی

 

عطا کر دے ہمیں بھی عشقِ احمد

خدا سے میں نے رو رو کر دعا کی

 

ظفرؔ سرکار نے آسان کر دی

گھڑی آئی جو مجھ پر اِبتلا کی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ