اردوئے معلیٰ

Search

ناز کعبہ ہیں، فخر قبلہ ہیں

آپ ارفع ہیں آپ اعلیٰ ہیں

 

آج محسوس ہو رہا ہے مجھے

میرے سرکار جلوہ فرما ہیں

 

نقش پائے رسول کے آگے

ماہ و انجم کی تابشیں کیا ہیں؟

 

ابر لطف نبی سے ہوں سیراب

جس قدر تشنگی کے صحرا ہیں

 

یہ جبین ازل پہ ہے مرقوم

بزم کن میں حضور یکتا ہیں

 

جتنے ذرے ہیں شہر طیبہ کے

عظمتوں کا سب استعارہ ہیں

 

زخم غم کی مجھے نہیں پروا

سرور دیں مرے مسیحا ہیں

 

میرے والی ہیں تاجدار نجف

میرے حامی شہ مدینہ ہیں

 

غیر کی بات میں نہیں کرتا

میرے آقا مرا بھروسہ ہیں

 

میری ہستی کا ہیں وہ دار و مدار

وہ مرا دین میری دنیا ہیں

 

نور کہتا ہوں اس لیے نعتیں

میری بخشش کا یہ ذریعہ ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ