نبیؐ اللہ کا مُجھ پر کرم ہے

نبیؐ اللہ کا مُجھ پر کرم ہے

نبیؐ دمساز میرا، دم بدم ہے

 

مرے سرکارؐ مُجھ پر مہرباں ہیں

مجھے تشویش ہے کوئی نہ غم ہے

 

امام الانبیا، محبوبِ یزداںؐ

عجب رُتبہ، عجب جاہ و حشم ہے

 

نہیں آنسو وہ برساتی ہے موتی

نبیؐ کی یاد میں جو آنکھ نم ہے

 

خُدا کا نام، اسمِ مصطفیؐ بھی

مرے سینے، مرے دِل میں رقم ہے

 

سگِ در ہوں درِ خیر البشرؐ کا

مرا سرکارؐ نے رکھا بھرم ہے

 

مری سرکارؐ کی وہ نعت لکھے

ظفرؔ! جو دیدہ ور، صاحب قلم ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

شاہانِ جہاں کس لئے شرمائے ہوئے ہیں
دل میں ہو یادِ مصطفیٰ ﷺ غم سے رہائیاں بھی ہوں
جامعِ اوصاف ہے جو حسن کی تصویر ہے
مدینہ دیکھتے ہیں اورکہاں کھڑے ہوئے ہیں
وہ ایک پھول کھلا تھا جو ریگ زاروں میں
آنکھ محرومِ نظارہ ہو ، ضروری کیا ہے
کوئی ہم پایہ ، نہ ثانی ترا کونین میں ہے
چشم ما شد وقف بہر دیدن روی کسی
مرے رہنما نے کیا کیا نہیں معجزے دکھائے
محمدؐ مظہر شان خدا ہیں