اردوئے معلیٰ

Search

نبی کے دیس کی ٹھنڈی ہوائیں یاد آتی ہیں

معطر مشکبو پیاری فضائیں یاد آتی ہیں

 

کبھی جب بیٹھتے تھے گنبدِ خضرا کی چھاؤں میں

جو مانگی تھیں وہاں ساری دعائیں یاد آتی ہیں

 

وہ بادل رحمتوں کے اور بخشش کی فراوانی

برستی ہر گھڑی نوری گھٹائیں یاد آتی ہیں

 

درودوں کے سلاموں کے ترانے وہ رسیلے سے

اذانوں کی بڑی میٹھی صدائیں یاد آتی ہیں

 

وہ روضے کی تجلی اور وہ انوار کی بارش

سنہری جالیوں کی وہ شعائیں یاد آتی ہیں

 

کرم سے جھولیاں بھرکر جو لوٹے تھے مدینے سے

محمد مصطفیٰ کی سب عطائیں یاد آتی ہیں

 

تمنا ہے بلائیں ناز کو پھر بھی مرے آقا

بڑی شدت سے وہ پیاری فضائیں یاد آتی ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ