نبی ﷺ پہ کتنا کرم رَبِّ ذوالجلال کا ہے

نبی ﷺ پہ کتنا کرم رَبِّ ذوالجلال کا ہے

کہ جو بھی وصف ہے اُن ﷺ کا بڑے کمال کا ہے

 

کھلے ہیں پھول جہاں بھی حسین سیرت کے

تمام عکس اُسی حسنِ لازوال کا ہے

 

جو زخم دل کو ملے ہیں فراقِ طیبہ میں

ضرور وقت کوئی اُن کے اِندمال کا ہے

 

حضور ﷺ! اِذنِ حضوری اِسے بھی مل جائے

شکستہ پا کو بھی ارمان عرضِ حال کا ہے

 

عزیزؔ مدحتِ سرکار ﷺ ہے وظیفۂ جاں

یہی تو خاص کرم شاہِ خوش خصال ﷺ کا ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

مشکلوں میں پکارا کرم ہی کرم
فاصلوں کو تکلف ہے ہم سے اگر ، ہم بھی بے بس نہیں ، بے سہارا نہیں
تمہیؐ سرور تمہیؐ ہو برگزیدہ یارسول اللہؐ
اگر میں عہد رسالت ماب میں ہوتا
جان ہیں آپؐ جانِ جہاں آپؐ ہیں
ہر موج ہوا زلف پریشانِ محمدؐ
رشکِ ایجاب تبھی حرفِ دعا ہوتا ہے
قصہء شقِّ قمر یاد آیا​
ہم گداؤں بے نواؤں کا سہارا آپ ہیں
گھڑی مڑی جی بھر آوندا اے ۔ پنجابی نعت