اردوئے معلیٰ

نبی کی ذات ہے کیا مظہرِ صلاح و فلاح

محیطِ فیضِ اَتم ، مصدرِ صلاح و فلاح

 

گدا ہوا جو کوئی بابِ مصطفائی کا

ہے اس کے زیرِ نگیں کشورِ صلاح وفلاح

 

قبولِ حسنِ عمل کےلئے درود شریف

عجیب طرح کا ہے زیورِ صلاح و فلاح

 

بیانِ نعتِ شریفِ جنابِ شاہِ امم

زباں کی تیغ کا ہے جوہرِ صلاح وفلاح

 

بہارِ نعتِ مبارک کا مَیں ہوا غواص

یہی ہے میرے لئے دفترِ صلاح و فلاح

 

لکھا ہے میں نے یہ دیوان بمدحِ ختمِ رسل

لگا ہے ہاتھ عجب گوہرِ صلاح و فلاح

 

کیا خدا نے جو کافی کو مدح خوانِ نبی

عطا کیا بخدا افسرِ صلاح وفلاح

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات