اردوئے معلیٰ

 

نعت لکھنے کا یہ سامان بنا لوں تو لکھوں

مشک و عنبر سے دہن اپنا بسا لوں تو لکھوں

 

چشمِ حوران بہشتی کا میں کاجل پا لوں

شاخِ سدرہ سے قلم پہلے بنا لوں تو لکھوں

 

یا قلم کی جگہ مل جائے مجھے نوکِ ہلال

صحفہِ شمس سے خالی اسے پا لوں تو لکھوں

 

صبغتہ اللہ سے رنگین تو کر لوں کاغذ

حاشیہ کاہکشان سے میں منگا لوں تو لکھوں

 

پہلے جبریل سے آداب ِکتابت سیکھوں

عظمتیں اسمِ مبارک کی لکھا لوں تو لکھوں

 

عمر بھر پہلے پڑھوں دل سے درود و سلام

پھر سراپا کو آنکھوں میں بسا لوں تو لکھوں

 

ما سوا کا خس و خاشاک بھرا ہے دل میں

آتشِ عشق سے میں اس کو جلا لوں تو لکھوں

 

نعت لکھنے کی یہ حسرت تو ہے قدرت لیکن

یہ لوازم نہیں ملتے انہیں پا لوں تو لکھوں

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات