نعت کی محفل سجانے کا مہینہ آ گیا

نعت کی محفل سجانے کا مہینہ آ گیا

مصطفی کے گیت گانے کا مہینہ آ گیا

 

نُور سے پُرنُور ہے کس دَرجہ بارہ نُور کی

مرحبا! رحمت کو پانے کا مہینہ آ گیا

 

آسمانِ دَہر سے ظُلمت کے بادل چَھٹ گئے

دوستو! خوشیاں منانے کا مہینہ آ گیا

 

غَم زدو!، اے بے کسو! تم کو مبارک باد ہو

سَوئی قِسمت کو جَگانے کا مہینہ آ گیا

 

زِندگی میں پھر ربیع النور آیا مرحبا!

عِشق کی شمع جلانے کا مہینہ آ گیا

 

پیارے آقا کی وِلادت کے ترانوں کی رضاؔ

ہر طرف دھومیں مچانے کا مہینہ آ گیا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

سوال : حُسن کی دنیا میں دیجیے تو مثال؟
محمدؐ کا حُسن و جمال اللہ اللہ
حُسن کی تشبیہ کے سب استعارے مسترد
جاری ہے فیض شہر شریعت کے بابؑ سے
سَگ پُرانے ہیں آپ کے آقا
بے خُود کِیے دیتے ہیں اَندازِ حِجَابَانَہ​
مرحبا! رحمت دوامی پر سلام
تاجدار جہاں یا نبی محترم (درود و سلام)
دوستو! نور کے خزینے کا
جو ان کے ہونٹوں پہ آ گیا ہے ، وہ لفظ قرآن ہوگیا ہے