اردوئے معلیٰ

Search

نور ہی نور نہ ہو کیوں شہِ ضو بار کی بات

بات اللہ کی ہے سیّدِ ابرار کی بات

 

رب کے محبوب کا ایثار ہی ہے صرف مثال

کون کر پائے گا اس طرح سے ایثار کی بات

 

میرے معبود تو مزدور پہ کر خاص کرم

کوئی بھی سُنتا نہیں ہے یہاں معمار کی بات

 

فضل یہ حضرت فاروق پہ دیکھو رب کا

جب تھے منبر پہ بتائی پسِ دیوار کی بات

 

حمد اور نعت کے مرکز کی بڑھی بات مگر

مالک الملک نے سُن لی ہے گنہگار کی بات

 

بخدا حمد ہی معراج سخن ہے طاہرؔ

تذکرہ بلبل و گل کا تُو ہے بے کار کی بات

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ