اردوئے معلیٰ

نہ نکہتے ز گُلے، نے خراشے از خارے

نہ نکہتے ز گُلے، نے خراشے از خارے

دریں چمن بہ چہ دل خوش کند گرفتارے

 

نہ کسی پھول سے کوئی خوشبو آتی ہے

نہ ہی کسی کانٹے سے کوئی خراش

پہنچتی ہے، اب اس چمن میں کوئی

اسیر اپنا دل خوش کرے تو کیسے کرے؟

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ