اردوئے معلیٰ

واعظ خطر نہیں مجھے نارِ حجیم کا

واعظ خطر نہیں مجھے نارِ حجیم کا

ہوں امتی شفیع کا بندہ کریم کا

 

اعدا کے واسطے بھی نہ کی بددعا کبھی

اللہ رے مرتبہ ترے خلقِ عظیم کا

 

یوسفؑ کا حسن نوحؑ کی سطوت دم مسیحؑ

خلت خلیلؑ کی یدِ بیضا کلیمؑ کا

 

مولا کے قد و زلف و دہن کی مثال ہے

مطلب کھلا ہوا ہے الف لام میم کا

 

آوارگانِ وادیٔ یثرب سے پوچھ لے

جس کو پتہ ملے نہ رہِ مستقیم کا

 

بیخودؔ دیار و یار سے اب دل اٹھائیے

کیجیے طواف چل کے نبی کے حریم کا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ