اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

والشمس والضحیٰ ہے اگر رُوئے مصطفیٰؐ

 

والشمس والضحیٰ ہے اگر رُوئے مصطفیٰؐ

واللیل کا جمال ہے گیسوئے مصطفیٰؐ

 

خواہش ہے ساری عمر یہی کیفیت رہے

دل سوئے مدینہ ہو، نظر سوئے مصطفیٰؐ

 

’’مازاغ‘‘ کی مثال ہیں آنکھیں حضورؐ کی

خوش کن ہلالِ عید سے َابروئے مصطفیٰؐ

 

عنبر بھی دنگ، مشک بھی ، کافور و عود بھی

بے مثل و بے مثال ہے خوشبوئے مصطفیٰؐ

 

قیمت عقیدتوں کی کوئی کیا لگائے گا

سو لاکھ جہاں، لے کے نہ دُوں موئے مصطفیٰؐ

 

جنت ہے جائے امن و سکون و قرارِ دل

جنت ہے بلا شک و شبہ کوئے مصطفیٰؐ

 

اشفاقؔ صرف اُنؐ کے سہارے کی آس ہے

گرتوں کو تھام لیتے ہیں بازُوئے مصطفیٰؐ

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

حصار نور میں ہوں گلشن طیبہ میں رہتا ہوں
اپنے بھاگ جگانے والے کیسے ہوں گے
لمحہ لمحہ بڑھ رہی ہے شان ورفعت آپ کی
تمنا ہے یہی دل میں سمائی یا رسول اللہﷺ
نور احمد باعث آفاق شد
یہ دل سکونت خیرالانام ہو جائے
اک چشمِ کرم ، شاہِ اُمم ، سیّدِ لولاک !
سنّت کی پیروی بھی ہے لازم ثنا کے ساتھ
مہر و مہ و انجم کی، تنویر کا وہ باعث
آنکھ ہجرِ شہِ دیں میں روتی رہے ، نعت ہوتی رہے