اردوئے معلیٰ

Search

وا رہتا ہے اُن پر درِ ایوانِ مدینہ

اس اوج پہ فائز ہیں اسیرانِ مدینہ

 

ہے خُلد بھی اک گوشۂ دامانِ مدینہ

کس درجہ ہے وُسعت تری میدانِ مدینہ

 

تم ایسی امارت کو سمجھ ہی نہیں سکتے

رکھتے ہیں جو گدڑی میں فقیرانِ مدینہ

 

یک لحظہ بھی لَو ماند نہیں پڑتی یہاں کی

آباد ہی رہتا ہے شبستانِ مدینہ

 

وہ اور کہیں جانے پہ مائل نہیں ہوتا

جو دیکھ لے اک بار گلستانِ مدینہ

 

یہ عمر کروں صرف تری نعت گری میں

اے جانِ سخن ، جانِ فدؔا ، جانِ مدینہ

 

کس طرح اُترتی ہیں فرشتوں کی قطاریں

کس اوج پہ ہے دیکھ فدا شانِ مدینہ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ