اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

وصف یہ بھی ہے مرے مولا تجھی کو زیبا

وصف یہ بھی ہے مرے مولا تجھی کو زیبا

اپنے محبوب کو تخلیق کیا سب سے جدا

 

تیری قدرت کو عیاں کرتا ہےدشتِ خاموش

تیری تسبیج بیاں کرتا ہے بہتا دریا

 

کیوں نہ فی احسنِ تقویم پہ قرباں جائیں

شکر صد شکر کہ مٹی سے ہمیں پیدا کیا

 

تو کہ پردوں کے جزیروں میں کہیں پنہاں تھا

ہم کو اس دل کے سمندر سے ملا ترا پتا

 

تیرا کوئی نہیں ثانی کہ ہے تو لافانی

اپنے اوصاف میں بس ایک ہے تو ہی یکتا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

تو ہے مشکل کشا، اے خدا، اے خدا
تو ہست تو ہی بود، تیری ذات لاشریک ​
کر رہے ہیں تیری ثناء خوانی
زباں پر حمدِ باری ہے مرے آنسو نہیں تھمتے
خداوندِ جہاں، آقا و مولا
خدا الطاف فرما، مہرباں ہے
ہے یہ حکمت خدائے عزوجل کی
کرو آدم کو سجدہ، جب فرشتوں کو یہ فرمایا خدا نے
خدا بندے کی شہ رگ سے قریں ہے
خدائے پاک ربّ العالمیں ہے