اردوئے معلیٰ

وہ لَوٹا ہے درِ سرکار سے، پا کر شفا دیکھو

جو آیا آپ کے در پر، مریضِ لا دوا دیکھو

 

خطا کاروں کے ہادی وہ، عطاؤں کے سمندر ہیں

خطائیں دیکھنے والو! عطائے مصطفی دیکھو

 

وہ آہیں تک بھی سنتے ہیں صدائیں سب کی سنتے ہیں

ادب سے دھیمے لہجے میں، ذرا دے کر صدا دیکھو

 

دعائیں مانگنے سے پہلے، یاں منظور ہوتی ہیں

وضو اشکِ ندامت سے کرو، مانگو دُعا دیکھو

 

نبی کا عشق افزوں تر ہو، احسانِ خُدا سمجھو

کرم دیکھو، عطا دیکھو، سخا دیکھو، جزا دیکھو

 

سگِ در میں، کہاں تاب و تواں، نزدیک آنے کی

ادب سے، در سے تھوڑا دُور، رہتا ہے کھڑا دیکھو

 

ظفرؔ! معمور دِل تیرا ہوا ہے عشقِ احمد سے

خُدا نے اُن کی چاہت کا دِیا تُجھ کو صِلہ دیکھو

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات