اردوئے معلیٰ

پہنچے مرا سلام، حضوری نصیب ہو

آئے کوئی پیام، حضوری نصیب ہو

 

اے رحمت تمام، حضوری نصیب ہو

حاضر ہو یہ غلام حضوری نصیب ہو

 

میں شہرّ مصطفیٰ میں کہوں نعتِ مصطفیٰ

لکھوں وہ پاک نام، حضوری نصیب ہو

 

شاخ سخن پہ موسمِ گُل نا نزول ہو

کِھل اٹھے گُل کلام، حضوری نصیب ہو

 

اک ورد زادِ روی بنے، رہنما بنے

ہو جائے انتظام، حضوری نصیب ہو

 

کوثر کے ایک جام سے مٹ جائے تشنگی

مل جائے ایک جام، حضوری نصیب ہو

 

ہر آرزو کی جان ہے مولا یہ آرزو

مولائے خاص و عام، حضوری نصیب ہو

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات