اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

پیار کرو ۔ناں

پریم کی ندیا جھوم رہی ہے
پریم کے جل میں پیر دھرو نا
پیار کرو نا
سنّاٹوں کی بھیڑ سے نکلو
خاموشی کے ساز کو توڑو
چاہت کا اک ساز بجاؤ
راگ پہاڑی، ماروا،ایمن
کیسری، میگھا،میانکی تُوڑی
دیش کے سُر بھی اچھے ہیں ناں
یا ملہاری کے بھیگے سُر
یا دیپک میں آگ لگاتے کومل، تیِور
سُر تو سارے اچھے ہیں ناں
درباری کے انگ میں کوئی گیت سناؤ
پیار بھرے جذبوں میں ڈوبے
امرت جیسے
میٹھے میٹھے بول کہو ناں
پیار کرو ناں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

لندن
خیال
سہرا
آج کل نیند بھی اذیت ہے
ایک اجڑی ہوئی زمیں ہوں میں
ہم نہ کہتے تھے کہ پت جھڑ میں ملو
عائشہ، علینہ، عائلین، دُعا اور عائسل کے لیے
نیلی جھیل کنارے ہے اس بھید بھری کا گاؤں
علامہ اقبالؒ
موت سے گفتگو