’’پیا ہے جامِ محبت جو آپ نے نوریؔ ‘‘

 

’’پیا ہے جامِ محبت جو آپ نے نوریؔ ‘‘

اُسی کی طاری رہے جان و دل میں مخموٗری

ہو جس سے پیدا سروٗر و بہار آنکھوں میں

’’رہے ہمیشہ اُسی کا خمار آنکھوں میں ‘‘

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ