اردوئے معلیٰ

Search

 

چاند سورج ترے ، ہر ایک ستارہ تیرا

ظلمتِ دہر میں ہر سو ہے اجالا تیرا

 

گو ترے عہدِ مبارک سے رہا ہوں محروم

تیری سیرت میں نظرآتا ہے چہرہ تیرا

 

تیری امت ، تری نسبت کے شرف سے زندہ

تیری نکہت سے مہکتا رہا صحرا تیرا

 

معجزہ تیری نبوت کاہے کتنا روشن

یعنی ہے مصحفِ قرآں ، یدِ بیضا تیرا

 

چاہیے خیر کے ایوان کی تعمیر اگر

کام اس کام میں دیتا ہے سراپا تیرا

 

شبِ دنیا میں ضیا تیری ہے ، اے ماہِ عرب

فرش سے عرش تلک طاری ہے ہالہ تیرا

 

شعر لکھتا ہوں تری نعت کا ، جب بھی آقا

جھلملاتا ہے مرے ذہن میں روضہ تیرا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ