اردوئے معلیٰ

Search

چلے زمِین سے جب آپ لامکاں کے لئے

ستارے پھُول بنے شاہِ دو جہاں کے لئے

 

وفورِ لطفِ نبی کا ہے معجزہ یہ بھی

کہ رات پا بہ سلاسل تھی اِک اذاں کے لئے

 

ہے آستانہء احمَد فقط چراغِ یقیں

جگہ نہیں ہے یہاں ظلمتِ گماں کے لئے

 

تِھیں فرشِ راہ نگاہیں مدینے والوں کی

اتر رہے تھے ملائک بھی سارباں کے لئے

 

ہمیں ہے آپ سے نسبت تو اپنے اعدا میں

ملُول کیوں ہوں کسی شورشِ نہاں کے لئے

 

دیارِقلب میں خوشبوئے خُلد جاگتی ہے

درودِ پاک وظیفہ ہو گر زباں کے لئے

 

مرُوں تو ، رکھنا  کفن میں درِ محمد کی

ذرا سی خاک مری خاکِ رائیگاں کے لئے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ