اردوئے معلیٰ

کب سے ناراض ہوں

شب سے ناراض ہوں

 

اس کے رخسار سے

لب سے ناراض ہوں

 

بھوک ہڑتال ہے

جب سے ناراض ہوں

 

ایک تجھ سے نہیں

سب سے ناراض ہوں

 

جب سے کھویا ہے دل

تب سے ناراض ہوں

 

کیوں نمازیں پڑھوں

رب سے ناراض ہوں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات