کرم فرما خدا کی ذاتِ باری

کرم فرما خدا کی ذاتِ باری

کرم اُس کا سدا جاری و ساری

کرے ابرِ کرم سے آبیاری

چلائے حبس میں بادِ بہاری

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

تو ہے مشکل کشا، اے خدا، اے خدا
تو ہست تو ہی بود، تیری ذات لاشریک ​
کر رہے ہیں تیری ثناء خوانی
زباں پر حمدِ باری ہے مرے آنسو نہیں تھمتے
خداوندِ جہاں، آقا و مولا
خدا الطاف فرما، مہرباں ہے
خُدا ہی خالقِ کون و مکاں ہے
خدا کا نُور برسے ہر زماں میں ہر جہاں میں
نہ مال و زر، نہ تاج و تخت مانگو
تو اپنی رحمتوں کا ابر برسا، خداوندا تو ہم پہ رحم فرما