اردوئے معلیٰ

Search

کر لیں کتنا بھی اہتمام یہ لفظ

بن نہیں سکتے مدحِ تام یہ لفظ

 

بھیجتے ہیں درود اور سلام

صورتِ جذبِ ناتمام یہ لفظ

 

باریابی کی آرزو میں ہیں

شاہِ عالَم ! ترے غلام ، یہ لفظ

 

خاص ہیں ، معتبر ہیں ، روشن ہیں

نعت آثار عام خام یہ لفظ

 

لب یُوحیٰ کی لمس یابی سے

ہو گئے صاحبِ مقام یہ لفظ

 

گُلتساں ثنا میں کرتے ہیں

مثلِ بادِ صبا ، خرام یہ لفظ

 

صبحِ تعبیر میں نمود کریں

عرصۂ خواب کے تمام یہ لفظ

 

نہیں شایانِ شانِ پیغمبر

میرے بے مایہ ، میرے عام یہ لفظ

 

اوجِ ذکرک کے بامِ حیرت پر

نعت جویا ہیں صبح و شام یہ لفظ

 

شرح توصیفِ مصطفیٰ کے لیے

لے کے آیا ہُوں زیرِ دام یہ لفظ

 

اذنِ تسطیر تک ابھی مقصودؔ

خامۂ شوق ہی میں تھام یہ لفظ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ